غزل۔پیمانہ

غزل۔پیمانہ Cover Image

پیمانے میں اب میرے وفا کون بھرے گا

اے جانِ وفا تو ہی بتا کون بھرے گا

 

یہ بات عجب ہے کہ تجھے بھول سکوں گا

دم تیری وفاووں سے سوا کون بھرے گا

 

ہوں تشنہ لبِ آبِ بقا ! شوقِ بقا سن

کوزے میں مرے آبِ بقا کون بھرے گا

 

بے رنگ سی تصویر ہوں اک تیرے بنا میں

تصویر میں اب رنگ نیا کون بھرے گا

 

شامیں مری رنگین رہیں دل کے جہاں کی

تاروں سے مرے دل کا خلا کون بھرے گا

 

اے تندد ہواؤ اُسے کہہ دو یہ خدارا

جو تیری تھی، وہ خالی جگہ کون بھرے گا

Written By:

Zuhayb Hussayn